• About Us
  • ایک وعدہ ہے کسی کا جو وفا ہوتا نہیں
    Poet: Saghar Siddiqui
    By: TARIQ BALOCH, HUB CHOWKI

    ایک وعدہ ہے کسی کا جو وفا ہوتا نہیں
    ورنہ ان تاروں بھری راتوں میں کیا ہوتا نہیں

    جی میں آتا ہے الٹ دیں انکے چہرے کا نقاب
    حوصلہ کرتے ہیں لیکن حوصلہ ہوتا نہیں

    شمع جسکی آبرو پر جان دے دے جھوم کر
    وہ پتنگا جل تو جاتا ہے ، فنا ہوتا نہیں

    اب تو مدت سے رہ و رسمِ نظارہ بند ہے
    اب تو انکا طور پر بھی سامنا ہوتا نہیں

    ہر شناور کو نہیں ملتا طلاطم سے خراج
    ہر سفینے کا محافظ